ایشیاپاکستان

کوئٹہ میں پھر دہشت گردی 3 جاں بحق 18 زخمی

تاحال کسی گروپ نے اس کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔

پاکستان کے صوبہ بلوچستان کے شہرکوئٹہ ایک مرتبہ پھر دہشت گردی کا نشانہ بن گیا۔ مشرقی بائی پاس پر سائیکل میں نصب بم دھماکے کے نتیجے میں 3 افراد جاں بحق اور 18 زخمی ہوگئے، دھماکے سے 4 دکانوں کو بھی نقصان پہنچا۔

پولیس کے مطابق دھماکا مشرقی بائی پاس کے علاقے شیر جان اسٹاپ پر مقامی میڈیکل اسٹور کے قریب ہوا۔

پولیس، ریسکیو اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں نے موقع پر پہنچ کر لاشوں اور تمام زخمی افراد کو سول اسپتال منتقل کردیا۔

پولیس کی ابتدائی رپورٹ کے مطابق دھماکا خیز مواد سائیکل میں نصب تھا۔ دھماکے سے 4 دکانوں اور ایک گاڑی کو بھی نقصان پہنچا جبکہ قریبی عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔ واقعے کے بعد پولیس نے دھماکے کی جگہ سے ضروری شواہد اکٹھے کئے۔

وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال نے کوئٹہ بم دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے قیمتی جانوں کے ضیاع پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔

تاحال کسی گروپ نے اس کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔

خیال رہے کہ رواں برس اپریل میں کوئٹہ کے نواحی علاقے ہزار گنجی میں قائم سبزی منڈی میں بم دھماکے سے 20 افراد شہید اور 48 افراد زخمی ہوئے تھے۔ دھماکے کی ذمہ داری دہشت گرد تنظیم داعش نے قبول کی تھی۔

ایمنسی انٹرنیشنل نے اپنے اعلامیے میں کوئٹہ بم دھماکے کو دردناک ماضی کی یاد قرار دیا تھا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button