دنیافلسطینمشرق وسطی

مسجدالاقصی کے باب الرحمه کو بند کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی: مسجدالاقصی کے خطیب

مسجدالاقصی کے خطیب نے جبری طور پر باب الرحمه کے نماز خانہ کو بند کرنے سے متعلق صیہونی حکومت کے فیصلے پر کڑی نکتہ چینی کی ہے۔

عربی 21 کی رپورٹ کے مطابق مسجدالاقصی کے خطیب شیخ عکرمه صبری نے کہا ہے کہ قدس کی غاصب اور جابر صیہونی حکومت اس کوشش میں ہے کہ نمازیوں پر دباو ڈال کر اور حملہ کر کے نمازیوں کیلئے باب الرحمه کے نماز خانہ کو بند کرے۔

انہوں نے کہا کہ کسی بھی طور فلسطینی باب الرحمه کو بند کرنے کی اجازت نہیں دیں گے اور صیہونی حکومت کے فیصلے کا بھرپور طریقے سے مقابلہ کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ فلسطینی 2019 میں باب الرحمه کو کھولنے میں کامیاب ہوئے تھے۔

واضح رہے کہ فلسطینی و اسلامی تشخص کی حیثیت سے مسلمانوں کے قبلہ اول مسجد الاقصی کو غاصب صیہونی فوجیوں اور صیہونی آباد کاروں کی جانب سے ہمیشہ جارحیت کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے اور صیہونی حکومت، بیت المقدس کا اسلامی تشخص ختم کرکے اسے صیہونزم کے نمونے میں تبدیل کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button