مشرق وسطیایراندنیایورپ

اسرائیل کو تباہ کرنے کے منصوبے پر کام چل رہا ہے

اسرائیل کی کوئی بھی بیوقوفی اس کی آخری بیوقوفی ہوگی

فارس نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق آئی آر جی سی کے کمانڈر جنرل ابو الفضل شکارچی نے صیہونی حکومت کے آرمی چیف کی حالیہ دھمکی کو نفسیاتی جنگ قرار دیا اور کہا کہ وہ ابھی تک ایران کی مسلح افواج کی طاقت اور قدرت کو سمجھ نہیں سکے ہیں۔

سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے کمانڈر کا کہنا ہے کہ صیہونی حکومت کے آرمی چیف کی دھمکیاں، نفسیاتی جنگ کا حصہ ہیں اور اگر حقیقت بھی ہو تو یہ ان کی خام خیالی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جیسا کے رہبر انقلاب اسلامی نے ماضی میں فرمایا تھا کہ اگر صیہونی حکومت نے اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف چھوٹی سی بھی بیوقوفی کی تو ہم ان کی میزائیل چھاونیوں کو بھی نشانہ بنائیں گے جن کے بارے میں وہ کہہ رہے ہیں کہ ایران پر حملے کے لئے ہی تیار کی گئی ہے اور بہت ہی کم وقت میں حیفا اور تل ابیب کو نیست و نابود کر دیں گے۔

جنرل ابو الفضل شکارچی نے تاکید کی کہ ان کو ایران کی طاقت کا اندازہ نہیں ہے، کچھ توانائیاں مخفی ہیں اور کچھ کا فوجی مشقوں کے درمیان مظاہرہ کیا گیا ہے اور انہیں توانائیوں کے ذریعے تل ابیب کو بہت ہی کم مدت میں نیست و نابود کر سکتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر انہوں نے کوئی بیوقوفی کی تو اپنا شیرازہ بکھرتا ہوا دیکھیں گے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button