دنیامشرق وسطییمن

یمن کے 20 شہروں میں سعودی جارحیت کے خلاف مظاہرے

المسیرہ کی رپورٹ کے مطابق یمنی عوام نے صعدہ ، صنعا اور الحدیدہ سمیت تقریبا 20 شہروں میں ہونے والے احتجاجی مظاہروں میں امریکہ، سعودی عرب اور اس کے اتحادیوں کے خلاف فلک شگاف نعرے  لگائے۔ مظاہرین نے یمن پر سعودی اتحاد کی جاری جارحیت کی مذمت کرتے ہوئے یمن کی فوج اور عوامی فورسز کی حمایت کا اعلان کیا اور جارحین کے انخلا پر تاکید کی۔

یمن کی تحریک انصار اللہ کے سربراہ اور انقلاب یمن کے رہنما سید عبدالملک بدرالدین الحوثی نے اپنے ملک کے خلاف امریکی سعودی جارحیت کو 6 برس مکمل ہونے پر قوم سے خطاب کیا۔

سید عبدالملک بدرالدین الحوثی نے اپنے خطاب کے آغاز میں، عوام کا شکریہ ادا کیا اور دشمن کی جارحیت کے مقابلے میں ان کی استقامت کی قدردانی کی۔

انصاراللہ کے سربراہ نے کہا کہ 6  سال قبل آدھی رات کو آغاز ہونے والی جارحیت ایک جرم اور غداری تھی۔ ماضی کے سمجھوتوں کے تحت یمن اور اس کے برے ہمسائے کے درمیان حالات پرامن تھے اور یمن کی جانب سے کوئی ایسا قدم نہیں اٹھایا گیا کہ اس ملک کے خلاف جارحیت میں متحدہ عرب امارات کی مشارکت کا جواز بن سکے۔

قابل ذکر ہے کہ یمن کے خلاف سعودی امریکی، صیہونی جنگ 26 مارچ 2021  سے ساتویں سال میں داخل ہوگئی ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button