انسانی حقوقدنیامشرق وسطییورپ

غلامی اور بردہ فروشی کے حامی جارج واشنگٹن کا مجسمہ منہدم

ہمارے نمائندے کے مطابق پولیس کے ہاتھوں جارج فلوئڈ نامی سیاہ فام امریکی شہری کے قتل کے خلاف مظاہرہ کرنے والوں نے پورٹ لینڈ سٹی کے سینڈے بلوارڈ پر نصب جارج واشنگٹن کے مجسمے کو گرانے سے پہلے امریکی پرچم بھی نذر آتش کیا۔
امریکہ میں نسل پرستی کے خلاف جاری مظاہروں کے آغاز سے اب تک بردہ داری اور بردہ فروشی کی علامت سمجھے جانے والے درجنوں مجسمے گرائے جا چکے ہیں۔
چند روز قبل ناانصافیوں کے خلاف مظاہرہ کرنے والے امریکی شہریوں نے ریاست ورجینیا کے شہر رچمنڈ کے ایک پارک میں نصب کرسٹوفر کولمبس کا مجسمہ توڑ کر اسے جھیل میں ڈال دیا تھا۔ مظاہرین نے اس سے پہلے رچمنڈ سٹی میں نصب نسلی برتری کے حامی مشہور امریکی جنرل، ویلیم کارٹر ویکھم کا مجسمہ بھی منہدم کر دیا تھا۔
امریکہ کے مختلف شہروں میں ان دنوں نسل پرستی اور پولیس کے تشدد کے خلاف مظاہرے کیے جارہے ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close