مشرق وسطیعراق

حزب اللہ عراق کی کھلی دھمکی، جن کے گھر شیشے کے ہوتے ہیں، وہ دوسروں کے گھروں پر پتھر نہیں مارتے…

Iraq,Hizballah

حزب اللہ عراق کے ترجمان محمد محی نے جمعے کو المسیرہ ٹی وی سے گفتگو میں کہا کہ سیکورٹی کے بہانے عراق میں امریکی فوجیوں کو باقی رکھنے کے لئے جمعرات کو بغداد میں دہشت گردانہ حملے کروائے گئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ بغداد حملوں میں صیہونی حکومت، سعودی عرب اور امریکا کے شیطانی مثلث کا ہاتھ ہے جن کا ہدف عراق میں داعش کو زندہ کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عراق میں تشدد پھیلانے کا کام سعودی عرب کا ہے جس کے تحت وہ عراق کو سینچری ڈیل کی طرف لے جانا چاہتا ہے۔

حزب اللہ عراق کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ہم اس سازش کا مقابلہ کریں گے۔ ہم اس سازش کو وہيں پہنچا دیں گے جہاں سے یہ آئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ تکفیری دہشت گرد گروہ داعش کو شام میں امریکی چھاونیوں میں، عراق کے سرحدی علاقوں میں اور اردن سے ملنے والی عراقی سرحد پر ٹریننگ دی جاتی ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button