ایراندنیامشرق وسطییورپ

ایران کے بالمقابل امریکہ پھر ناکام ہوگا: صدر روحانی

صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے کابینہ کے اجلاس میں کہا کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد بائیس اکتیس کے میکانزم میں وضاحت کی گئی ہے کہ ایٹمی سمجھوتے کے فریق یا اس کا کوئی ایک فریق ہی اس میکانزم سے استفادہ کر سکتا ہے لیکن امریکہ جو ایٹمی سمجھوتے سے باہر نکل چکا ہے، وہ اس میکانیزم کو استعمال نہیں کر سکتا۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ ایٹمی سمجھوتے کے تمام فریق پہلے ہی امریکی کوششوں کی مذمت کر چکے ہیں اور امریکہ ایک بار پھر تنہا رہ گیا اور ملت ایران سربلند و سرفراز رہے۔

ڈاکٹر روحانی نے کہا کہ ایران کے عوام اور حکام نے دشمن کی سازشوں کا ڈٹ کر مقابلہ کیا اور وائٹ ہاؤس کو سمجھا دیا کہ اس نے ایران کے سلسلے میں غلطی کی ہے ۔

صدر ایران نے کہا کہ وائٹ ہاؤس کے جابر حکام اور ملت ایران کے خلاف ظالمانہ پابندیاں ہمیشہ باقی نہیں رہیں گی۔

ایران کے صدر نے واضح کیا کہ حکومت ملک کو نان پیٹرولئم برآمدات کے ذریعے چلا رہی ہے۔ انہوں نے پابندیوں کو ناکام بنانے کے لئے حکومت ایران کے اقدامات کو امریکہ کے منہ پر طمانچے سے تعبیر کیا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close