ایرانمشرق وسطی

192 شہدائے دفاع مقدس کی آغوش مادر وطن میں واپسی

شہدائے دفاع مقدس کے جنازے کو ایران کی جنوب مغربی سرحد شلمچے سے ملک میں منتقل کیا گیا۔

کورونا وائرس کی وجہ سے لوگوں کو شہدائے دفاع مقدس کے جنازے کے استقبال سے منع کر دیا گیا تھا اور بہت ہی سادگی کے ساتھ شہداء کے جنازے ملک میں داخل ہوئے۔

بتایا جاتا ہے کہ یہ 192 شہدائے دفاع مقدس، والفجرابتدائی، والفجر-1، رمضان، خیبر، بدر، کربلا-4، کربلا-5 اور بیت المقدس-7 نامی آپریشنز میں شریک تھے۔

صدام کی جانب سے ایران پر مسلط کردہ آٹھ سالہ جنگ کے دوران، 2 لاکھ 30 ہزار افراد شہید، لاکھوں کی تعداد میں افراد زخمی اور ہزاروں کی تعداد میں لاپتہ ہوگئے۔

اس مسلط کردہ جنگ میں کچھ عرب اور مغربی ممالک نے عراق کی صدام حکومت کا کھل کر ساتھ دیا تھا جس کا مقصد، ایران کے اسلامی انقلاب کو ناکام بنانا تھا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close