ایرانعربمشرق وسطییمن

عالمی برادری سعودی اتحاد کے جرائم کو روکے: ایران

اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان سید عباس موسوی نے شادی کی تقریب پر حملے کے نتیجے میں 25 نہتے شہریوں بشمول خواتین اور بچوں کے قتل عام کی شدید مذمت کی اور ان کے لواحقین سے ہمدردی کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ افسوس کی بات ہے کہ یمن میں سعودی اتحاد کے جرائم کے سامنے بین الاقوامی برادری خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔

سید عباس موسوی نے بین الاقوامی برادری اور انسانی حقوق کی تنظیموں سے کہا کہ وہ یمن میں سعودی اتحاد کے جرائم کو روکنے کی ہر ممکن کوشش کریں۔

انہوں نے کہا کہ یمن پر جارحیت کرنے والے ممالک کیلئے فوجی ساز و سامان تیار کرنے والے ممالک جو یمنی خواتین اور بچوں کو بموں کے ذریعے بے دردی سے قتل کرتے ہیں وہ سب ان جرائم میں برابر کے شریک ہیں اور ان کو یمنی عوام اور بین الاقوامی برادری کے سامنے جوابدہ ہونا ہوگا۔

ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ یمن میں سعودی اتحاد کی جارحیت ایسے عالم میں جاری ہے کہ جب اقوام متحدہ نے حالیہ دنوں میں امریکی دباؤ کے تحت اور سعودی عرب کی مالی حمایت کے سبب، اُس کا نام بچوں کو قتل کرنے والے ممالک کی فہرست سے نکال دیا ہے۔

سید عباس موسوی نے اقوام متحدہ سے اپنے اس فیصلے پر نظر ثانی کرنے کے علاوہ حملوں کو جلد از جلد روکنے اور یمن کے نہتے شہریوں کے تحفظ کیلئے ضروری اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close