دنیامشرق وسطییورپ

سابق اسرائيلی وزیر جنگ نے نیتن یاہو کی حکومت کے خاتمے کا مطالبہ کیا

اسرائيل بیتنا پارٹی کے رہنما اور سابق صیہونی وزیر جنگ اویگڈر لیبرمین نے کہا ہے کہ موجودہ وزیر اعظم بنیامن نیتن یاہو کی حکومت کو گرا دیا جانا چاہیے اور وہ اس سلسلے میں ہر ممکن کوشش کریں گے۔ انھوں نے کہا کہ ہم جلد ہی موجودہ حکومت کو گرانے کے لیے اپنے تمام امکانات کو بروئے کار لائيں گے اور اس حکومت کو اسرائيل کا انتظام چلانے کا حق نہیں ہے کیونکہ اس حکومت نے کورونا کے بحران میں صحیح طریقے سے کام نہیں کیا ہے۔

لیبرمین نے، جو غزہ میں استقامتی گروہوں سے مقابلے کے طریقے پر نیتن یاہو سے شدید اختلاف کی وجہ سے وزیر جنگ کے عہدے سے استعفی دے چکے تھے، کہا ہے کہ ہمیں ایک بہتر حقیقت تک پہنچنا چاہیے۔ واضح رہے کہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے روکنے میں ناکامی کی وجہ سے نیتن یاہو کی حکومت، اسرائيل کی سیاسی جماعتوں کی جانب سے سخت دباؤ میں ہے۔ اسرائيل کی وزیر صحت نے منگل کے روز اپنے عہدے سے استعفی دے دیا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close