فلسطینمشرق وسطی

مقبوضہ علاقوں پر صیہونی مکانات کی تعمیر جنگی جرم ہے: فلسطین

Palestine

فارس نیوز کے مطابق فلسطین کی قانون ساز اسمبلی کے رکن محمد شہاب نے کہا کہ مقبوضہ علاقوں میں آٹھ سو نئے مکانات کی تعمیر پر مبنی خودساختہ صیہونی حکومت کا فیصلہ ایک جنگی جرم ہے اور ماضی سے چلے آ رہے اس کے مجرمانہ کردار کا ایک تسلسل ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس جارحانہ اور مجرمانہ اقدام کا مقصد فلسطین کے مغربی کنارے کو مقبوضہ علاقے میں ضم کرنے والے منصوبے کو عملی جامہ پہنانا ہے۔ فلسطینی رکن پارلیمنٹ نے فلسطین کے باشندوں کی اراضی پر صیہونیوں کے جابرانہ اور غاصبانہ قبضے کو تمام بین الاقوامی قوانین اور انسانی حقوق کے منشور کی کھلی خلاف ورزی قرار دیا۔

محمد شہاب نے عالمی برادری اور بین الاقوامی اداروں نے مطالبہ کیا کہ وہ غاصب صیہونیوں کے جارحانہ اور مجرمانہ اقدامات کو لگام دینے کے لئے میدان میں آئیں۔

خیال رہے کہ آخری چند مہینوں میں ایک طرف خودساختہ غاصب صیہونی حکومت نے فلسطینی مکانات، مراکز اور زرعی اراضی کو تباہ کرنے اور انہیں ہتھیانے کا عمل تیز کر دیا ہے اور دوسری طرف ان علاقوں میں غیر قانونی طور پر مکانات کی تعمیر اور صیہونی آبادکاری میں بھی شدت پیدا کر دی ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button