مشرق وسطییمن

مغربی ہتھیاروں سے یمنی عورتوں اور بچوں کا قتل عام ہو رہا ہے، انصاراللہ کے سربراہ کا بیان

سعودی عرب یورپی ہتھیاروں سے یمنی خواتین اور بچوں کا قتل عام کر رہا ہے۔

العالم کی رپورٹ کے مطابق یمن کی عوامی اور انقلابی تحریک انصاراللہ کے سیکریٹری جنرل عبدالملک الحوثی نے یوم مادر اور یوم خواتین کی مناسبت سے منعقد ہونے والی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دشمن جو خواتین کے حقوق کی باتیں کرتے نہیں تھکتے اپنی پالیسیوں کے ذریعے خواتین کو مسائل و مشکلات سے دوچار کرتے ہیں اور یمن کے بچے اور خواتین یورپی ہتھیاروں کی بھینٹ چڑھ رہی ہیں۔انصاراللہ کے سیکریٹری جنرل نے یمن پر سعودی جارحیت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اس جنگ سے اسلام دشمنوں کا اصل مقصد یمنی عوام پر تسلط جمانا ہے۔ادھریمنی فورسز نے سعودی عرب کے نجران علاقے میں ایک کارروائی کے دوران سعودی فوج کےایک کمانڈر کو ہلاک کر دیا۔یمنی فوج کی رپورٹ کے مطابق یمنی فورسز نے سعودی فوج کے، تکنیکی منصوبہ بندی کے کمانڈر سلمان عبدالعزیز العسیری کی گاڑی کو نشانہ بنا کراسے ہلاک کر دیا۔یمن کی سرکاری فوج نے گزشتہ روز سعودی اتحاد کے حملوں کا منہ توڑ جواب دیتے ہوئے نجران میں اتحادی افواج کے مرکز پر بدر پی ون نامی میزائل داغے۔ یمنی فوج کا کہنا ہے کہ میزائل حملے میں دسیوں سعودی فوجی ہلاک یا زخمی ہوئے ہیں۔واضح رہے کہ سعودی عرب نے امریکا اور اسرائیل کی حمایت سے اور اتحادی ملکوں کے ساتھ مل کر چھبیس مارچ دوہزار پندرہ سے یمن پر وحشیانہ جارحیتوں کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے ۔ اس دوران سعودی حملوں میں دسیوں ہزار یمنی شہری شہید اور زخمی ہوئے ہیں جبکہ دسیوں لاکھ یمنی باشندے اپنے گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہوئے ہیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button