ایرانمشرق وسطییورپ

یوکرین کے مسافر طیارے کا حادثہ انسانی غلطی ہے: ایران

اسلامی جمہوریہ ایران کی مسلح افواج نے آج اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ امریکی صدر اور فوجی حکام کی جانب سے ایران کے بعض مقامات پر حملے کرنے سے متعلق دی جانے والی دھمکیوں اور علاقے میں فضائی اقدامات بڑھ جانے کے پیش نظر ایران کی مسلح افواج ہر قسم کے خطرات کا مقابلہ کرنے کیلئے ہائی الرٹ ہو گئی تھیں۔

مسلح افواج کے بیان میں آیا ہے کہ عراق میں دہشتگرد امریکہ کے فوجی اڈوں پر میزائلی حملوں کے بعد اس کے جنگی طیاروں کی نقل و حرکت بڑھ گئی اور ریڈار میں اس کے اھداف کا مشاہدہ کیا گیا جس کی وجہ سے ایئر ڈیفنس فورس کی حساسیت بڑھ گئی۔ اور اس قسم کی بحرانی صورتحال میں یوکرین کے بوئینگ 752 طیارے نے امام خمینی (رح) انٹرنیشنل ایئر پورٹ سے اڑان بھری اور وہ سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے حساس مرکز سے نزدیک ہوا اور دشمن کے طیارے کی شکل اختیار کر گیا جس کے بعد ایک انسانی غلطی سے یوکرین کا مسافر طیارہ نشانہ بنا اور وہ تباہ ہوا۔

مسلح افواج کے بیان میں انسانی غلطی کی وجہ سے طیارے میں جاں بحق ہونے والوں کے اہلخانہ سے تعزیت و تسلیت کی گئی اور انھیں اطمینان دلایا گیا کہ اس بات کا جائزہ لیا جائے گا کہ آئندہ اس قسم کا کوئی بھی ناخوشگوار واقعہ رونما نہ ہو اور اس واقعہ میں ملوث شخص کے خلاف قانونی چارہ جوئی کی جائے گی۔

واضح رہے کہ بدھ 8 جنوری کو یوکرین کا بوئنگ 752 طیارہ تہران کے قریب گر کر تباہ ہو ا تھا، جس میں سوار تمام 176 افراد جاں بحق ہو گئے طیارہ تہران کے امام خمینی انٹرنیشنل ایئر پورٹ سے ٹیک آف کے کچھ دیر بعد گر کر تباہ ہوا تھا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button