ایرانمشرق وسطی

ایران دہشت گردوں کو سرحدی علاقوں میں داخل نہیں ہونے دے گا، صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی کی تاکید

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے بدھ کے روز کابینہ کے اجلاس میں آرمینیا اور آذربائیجان کے حکام کے ساتھ ہونے والی اپنی گفتگو کا ذکر کیا۔ انھوں نے کہا کہ اس گفتگو میں جمہوریہ آذربائیجان کی ارضی سالمیت کے تحفظ پر تاکید کی گئی ہے۔

صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے کہا کہ ایران کا ہمیشہ یہی خیال رہا ہے کہ جنگ و خونریزی سے کوئی مسئلہ حل نہیں ہوتا اس لئے دیگر طریقے تلاش کئے جانے کی ضرورت ہوتی ہے اور تہران اس بارے میں ہر طرح کا تعاون کرنے کے لئے آمادہ ہے۔

صدر مملکت نے کہا کہ ایران اس بات کی ہرگز اجازت نہیں دے گا کہ بعض مختلف بہانوں سے ان دہشت گردوں کو کہ ایران جن کے خلاف عرصہ دراز سے برسرپیکار رہا ہے، ایران کے سرحدی علاقوں تک پہنچنے کا موقع فراہم کیا جائے – صدر روحانی نے اسی طرح آرمینیا اور آذربائیجان کے درمیان تنازعہ اور جنگ کو علاقائی جنگ میں تبدیل کئے جانے پر سخت خبردار کیا اور کہا کہ جو لوگ جنگ کی آگ کو مزید بھڑکانے کی کوشش کر رہے ہیں ان کو جان لینا چاہئے کہ یہ جنگ کسی کے بھی مفاد میں نہیں ہے اور اس جنگ کو سیاسی طریقے سے ختم کرائے جانے کی ضرورت ہے۔

صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے جنگ و غاصبانہ قبضے کو ایران کی نظر میں بالکل ناقابل قبول قرار دیتے ہوئے کہا کہ امید کی جاتی ہے کہ انجام پانے والی کوششوں سے علاقے میں استحکام بحال ہو جائے گا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close