عراقمشرق وسطی

عراق سے امریکی سفیر کو نکالنے کا مطالبہ

الفتح اتحاد کے نمائندے کا کہنا تھا کہ عراق کی سیاسی جماعتوں کے رہنماوں کو اس بار امریکہ کی جانب سے دہشتگرد گروہ داعش کی دہشتگردانہ کارروائیوں کے لئے حمایت سے چشم پوشی نہیں کرنی چاہئیے۔

عراق کے سابق وزیر اعظم نوری المالکی نے بھی ٹوئیٹ کرتے ہوئے امریکی سفیر کے خط کی جانب اشارہ کرتے ہوئے لکھا کہ عراق میں حکومت اور عوام اپنے قومی مفادات اور ملک کی مصلحت کو سمجھتے ہیں۔

واضح رہے کہ عراقی ذرائع ابلاغ نے کل بروز منگل عراق میں تعینات امریکی سفیر متیو ٹیولر سے منسوب خط کو جاری اور شائع کیا کہ جس میں امریکی سفیر نے کہا تھا کہ اگر عراق میں حکومت تشکیل نہ پائے تو امریکہ، عراق کو در پیش مسائل و مشکلات میں مدد دینے کیلئے ہر قسم کی کوشش کرے گا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close