دنیاایشیاپاکستان

اسلام آباد میں سرکاری ملازمین اور پولیس کے درمیان تصادم

Pakistan Islamabad

میڈیا رپورٹوں کے مطابق پاکستان کی وفاقی حکومت کی جانب سے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے سے متعلق فیصلہ نہ ہونے پر سرکاری ملازمین نے شاہرائے دستور پر پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے احتجاج کیا۔

سرکاری ملازمین کو منتشر کرنے کے لیے پولیس نے آنسو گیس کی شیلنگ کی جبکہ سرکاری ملازمین کی جانب سے پولیس پر پتھراؤ کیے جانے کی اطلاعات ہیں۔ پولیس نے متعدد مظاہرین کو گرفتار بھی کر لیا ہے۔ کہا جارہا ہے کہ سرکاری ملازمین کے احتجاج کے باعث اسلام آباد سیکریٹریٹ اور وزیر اعظم ہاؤس جانے والا راستہ بند کرتے ہوئے سیکیورٹی بھی بڑھا دی گئی۔

اپوزیشن جماعت پیپلز پارٹی کی رہنما اور سینیٹر شیری رحمٰن نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ ‘آج اسلام آباد میدان جنگ بن گیا ہے، ملازمین کے پر امن مظاہرے پر لاٹھی چارج اور شیلنگ قابل مذمت ہے’۔

پاکستان مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز نے سرکاری ملازمین کی حمایت کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملازمین پر تشدد، آنسو گیس اور گرفتاریوں کی مذمت کی ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز کابینہ وفاقی سیکریٹریٹ ملازمین کی تنخواہوں میں اضافے کے فیصلے پر نہیں پہنچ سکی تھی اور اس معاملے پر ملازمین کے نمائندوں اور وزیر داخلہ شیخ رشید کے درمیان ہونے والی فالو اپ میٹنگ کا بھی کوئی نتیجہ نہیں نکلا تھا۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button