دنیاعربمشرق وسطییمن

عالمی اداروں کی ڈرامائی خاموشی سے سعودی عرب فائدہ اٹھا رہا ہے

Yaman Saudi

المسیرہ کی رپورٹ کے مطابق عالمی اداروں کی ڈرامائی خاموشی سے سعودی عرب مسلسل فائدہ اٹھا رہا ہے اور جارح سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے صوبہ مارب کے صرواح اورجبل مراد کےشہروں اور اسی طرح صوبجہ صعدہ کے الظاہر شہر پر بمباری کی جس کے بعد شدید دھماکوں کی آوازیں سنائی دیں۔ ہونے والی بمباری سے جانی اور مالی نقصانات کی تفصیلات ابھی تک سامنے نہیں آئیں۔

یمن پر یہ حملہ ایسے میں ہوا کہ جب 25 جنورری کو عالمی یوم یمن کے موقع پر یمن کے پندرہ صوبوں میں بڑے بڑے مظاہرے ہوئے اور ریلیاں نکالی گئیں جن میں لاکھوں یمنی شہریوں نے شرکت کر کے امریکہ، سعودی عرب اور اسرائیل کے مظالم اور جارحیتوں کی مذمت کی۔ یمنی مظاہرین نے اعلان کیا کہ انکے ملک پر مسلط کردہ جنگ در حقیقت امریکی و صیہونی جارحیت ہے اور آل سعود نے امریکہ کی ایما پر ہی یمن پر چڑھائی کی ہے۔

یاد رہے کہ ۲۵ جنوری کو ’عالمی یومِ یمن‘ قرار دیا گیا ہے جس کا مقصد وہاں پر جاری بیرونی جنگ و جارحیت کی روک تھام کے لئے عالمی سطح پر جد و جہد کرنا ہے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب امریکہ، متحدہ عرب امارات اور چند دیگر ممالک کی مدد سے مارچ دو ہزار پندرہ سے یمن کے خلاف جارحانہ حملوں کے ساتھ ہی اس ملک کا بری، بحری اور فضائی محاصرہ کئے ہوئے ہے جس کے باعث اب تک سترہ ہزار سے زیادہ یمنی شہری شہید اور دسیوں ہزار زخمی ہو چکے ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button