شاممشرق وسطییورپ

امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی سازشیں ناکام ہوگئیں، صدر بشار اسد

اطالوی ٹیلی ویژن کو انٹرویو دیتے ہوئے صدر بشار اسد نے دہشت گردوں کے خلاف شامی فوج کی کامیابیوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اس جنگ سے ہمیں بہت کچھ سیکھنے کا موقع ملا ہے۔ انہوں نے امریکہ اور دیگر مغربی ملکوں کو شام میں بدامنی اور دہشت گردی کا اصل ذمہ دار قرار دیتے ہوئے کہا کہ شامی فوج نے اس جنگ میں عظیم کامیابی حاصل کرلی ہے۔

شام کے صدر نے کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے مغربی الزامات کو کذب محض قرار دیتے ہوئے کہا ہم نے کبھی بھی عام تباہی پھیلانے والے ہتھیاروں کا استعمال نہیں کیا۔انہوں نے شام میں دہشت گردی کے حامیوں پر کڑی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی لڑائیوں میں الجھے فریقوں کی تعداد زیادہ ہونے کے باعث سیاسی صورتحال کافی پیچیدہ ہے اور بعض بیرونی قوتیں اس جنگ کو مزید طول دینے کی کوشش کر رہی ہیں۔

شام کے صدر نے ملک میں کسی بھی قسم کی مذہبی، نسلی اور سیاسی جنگ کے امکان کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں نے بیرونی طاقتوں کی مالی اور فوجی حمایت کے بل پر ملک کے بعض علاقوں پر قبضہ کر رکھا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button