عراقمشرق وسطی

عراق، حشد الشعبی نے داعش کا حملہ ناکام بنا دیا

عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشد الشعبی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس نے جرف النصر کے علاقے پر داعش دہشتگرد گروہ کے حملے کو ناکام بناتے ہوئے دہشتگردوں کو فرار اختیار کرنے پر مجبور کر دیا۔ عراق میں داعش دہشتگردوں کی شکست کے باوجود مختلف علاقوں میں اب بھی داعشی عناصر موجود ہیں جو وقفے وقفے سے دہشتگردانہ کاروائیاں کرتے رہتے ہیں۔

داعش دہشتگرد گروہ نے دو ہزار چودہ میں امریکہ اور اس کے مغربی و عرب اتحادیوں منجملہ سعودی عرب کی مدد سے عراق پر حملہ کیا اور اس ملک کے شمالی و مغربی علاقوں پر قبضہ کر کے عوام پر بے پناہ مظالم ڈھائے۔

بہت سے علاقوں پر داعش کے قبضے کے بعد عراق نے اسلامی جمہوریہ ایران سے مدد کی اپیل کی۔ عراقی فوجیوں نے اسلامی جمہوریہ ایران کے فوجی مشیروں کی مدد سے سترہ نومبر دو ہزار ستر کو صوبہ الانبار کے راوہ شہر کو آزاد کرا لیا اور اس شہر کی آزادی کے بعد عراق میں عملی طور پر داعش کا کام تمام ہو گیا اور اس کے تسلط سے تمام علاقے آزاد کرا لئے گئے۔

دوہزار چودہ میں عراق کے مختلف علاقوں اور شہروں پر داعش کے قبضے کے بعد بزرگ مرجع تقلید آیت اللہ العظمی سیستانی کے فتوے سے رضاکار عوامی فورس الحشد الشعبی کی تشکیل عمل میں آئی اور دو ہزار سولہ میں پارلیمینٹ کی توثیق سے عراق کی مسلح افواج کا حصہ بن گئی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close