افریقہانسانی حقوقدنیا

نائیجیریا میں شیخ زکزاکی کے حامیوں پر حملہ 6 مسلمان شہید

نائیجیریا کے مسلمانوں پر نائیجیریا کی حکومت کی طرف سے جارحیت اوربربریت کا سلسلہ جاری ہے۔

نائجیریا کی پولیس نے دارالحکومت ابوجا میں اسلامی مومنٹ کے سربراہ آیت اللہ شیخ زکزاکی کے حامیوں پر حملہ کرکے 6 مسلمانوں کو شہید کردیا۔ یہ افراد اس وقت شہید ہوئے جب نائجیریا کی پولیس نے آیت اللہ شیخ زکزاکی کی رہائی کے لیے ہونے والے پرامن مظاہرے پر اندھا دھند فائرنگ کی۔

مظاہرین نے نائجیریا میں مسلمانوں پر ظلم و بربریت کو روکے جانے کا بھی مطالبہ کیا۔

واضح رہے کہ نائیجیریا کی فوج نے بارہ اور تیرہ دسمبر دو ہزار پندرہ کو چہلم امام حسین علیہ السلام کے موقع پر زاریا شہر میں ایک امام بارگاہ اور آیت اللہ شیخ زکزاکی کے گھر پر حملہ کر کے ہزاروں مسلمانوں کو شہید اور زخمی کر دیا تھا۔

فوج آیت اللہ ابراہیم زکزاکی اور ان کی اہلیہ کو زخمی کرنے کے بعد گرفتار کر کے لے گئی تھی۔ جس کے بعد سے جیل میں آیت اللہ زکزاکی کی جسمانی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے۔ فوج کی فائرنگ سے آیت اللہ زکزاکی کے تین بیٹے بھی شہید ہوئے تھے۔ اقوام متحدہ سمیت تمام عالمی ادارے اس قسم کی جارحیت پر خاموش ہیں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button