دنیاانسانی حقوقایرانمشرق وسطی

ایران میں مارٹر گولے گرنے پر آرمینیا اور آذربائيجان نے ایران سے معافی مانگي

جنرل قاسم رضائي نے آذربائيجان اور آرمینیا کے درمیان جنگ کی طرف اشارہ کرتے ہوئے متحارب فریقوں کے درمیان فائرنگ کے تبادلے کو ناخوشگوار بتایا اور کہا کہ اٹھائيس سال سے زیادہ کے عرصے سے قرہ باغ کے مسئلے میں تنازعہ موجود ہے جس کی وجہ سے دونوں ملکوں کے بعض شہری مارے جاتے ہیں اور یہ ہمارے لیے افسوس کی بات ہے۔ انھوں نے کہا کہ ہمیں امید ہے کہ اقوام متحدہ کا ادارہ جلد از جلد اپنی ذمہ داریوں پر عمل کرے گا اور دونوں ملکوں کے اختلاف کو حل کرے گا۔

ایران کی پولیس فورس کے ڈپٹی چیف جنرل قاسم رضائی نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان فائرنگ کے تبادلے میں کبھی کبھی راکٹ اور مارٹر گولے ہمارے علاقوں میں بھی آ جاتے ہیں اور ایران کی سرحد محافظ فورس دونوں ملکوں کو اس سلسلے میں وارننگ دے چکی ہے اور ان دونوں ہی ملکوں نے اس غلطی پر معافی مانگ لی ہے اور کہا ہے اب اس طرح کی غلطی نہیں ہوگي۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close