مشرق وسطییمن

یمن کے رہائشی علاقوں پر جارح سعودی اتحاد کی پھر بمباری

المسیرہ ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے پیر کی شب صوبہ مآرب کے ماہلیہ اور مجزر، صوبے الجوف کے خب اور شعف جبکہ صوبہ البیضا کے ولد ربیع علاقوں کو نشانہ بنایا۔

گزشتہ روز بھی یمن کے المسیرہ ٹی وی نے خبر دی تھی کہ جارح سعودی اتحاد کے جنگی طیاروں نے شمالی یمن کے علاقے کتاف میں ایک رہائشی مکان کو نشانہ بنایات ھا۔ یہ مکان اس سے قبل بھی سعودی اتحاد کی جارحیت کا نشانہ بنا تھا جس میں ایک ہی کنبے کے نو افراد شہید ہو گئے تھے۔ جارح سعودی اتحاد کے اس حملے میں کم از کم دو خواتین جاں بحق اور متعدد افراد زخمی ہو گئے۔

رہائشی علاقوں پر بمباری سعودی عرب اور اسکے اتحادیوں کا معمول بن چکا ہے۔ گزشتہ ساڑھے پانچ سال سے یمن کو سعودی عرب اور اسکے اتحادیوں کی شدید زمینی، سمندری اور فضائی جارحیت کا سامنا ہے۔ جنگ کے نتیجے میں اب تک جہاں دسیوں ہزار یمنی شہری شہید و زخمی اور لاکھوں دربدر ہو کر بے سرو سامانی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہوئے وہیں یمن کے عوام کوکورونا وائرس سمیت مختلف قسم کے وبائی امراض کا بھی سامنا ہے۔

اس وقت سعودی عرب کی مسلط کردہ جنگ کے سبب یمن کی بنیادی تنصیبات تباہ ہو کر رہ گئی ہیں اور حتیٰ اسپتال، طبی مراکز، مساجد اور مدارس بھی جارح دشمن کے حملے سے محفوظ نہیں رہ سکے ہیں۔ اس وقت یمنی عوام کو شدید طور پر غذا، دوا اور ایندھن جیسی دیگر ضروریات زندگی کی قلت کا بھی سامنا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close