اہل بیتاسلاماسلامی تاریخ

Maula Ali(a.s)

Hazrat Ali(a.s)

Maula Ali(a.s) Hazrat Ali(a.s)

متن حدیث

ان رسول الله صلى الله عليه وسلم خرج إلى تبوك واستخلف عليا، فقال: اتخلفني في الصبيان والنساء، قال:” الا ترضى ان تكون مني بمنزلة هارون من موسى؟ إلا انه ليس نبي بعدي”

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم غزوہ تبوک کے لیے تشریف لے گئے تو علی رضی اللہ عنہ کو مدینہ میں اپنا نائب بنایا۔ علی رضی اللہ عنہ نے عرض کیا کہ آپ مجھے بچوں اور عورتوں میں چھوڑے جا رہے ہیں؟ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کیا تم اس پر خوش نہیں ہو کہ میرے لیے تم ایسے ہو جیسے موسیٰ کے لیے ہارون تھے۔ لیکن فرق یہ ہے کہ میرے بعد کوئی نبی نہیں ہو گا۔ 

حدیث منزلت

حدیث منزلت (عربی: حدیث المنزلہ) اہل سنت اور اہل تشیع میں مستند ترین حدیث شمار کی جاتی ہے جو علی بن ابی طالب کی فضیلت پر دلیل سمجھی جاتی ہے۔ اِس حدیث کو اہل سنت اور اہل تشیع کے سبھی علمائے محدثین نے اپنی اپنی کتب میں ثقہ راویوں کی بابت نقل کرتے ہوئے درج کیا ہے۔

حدیث کی سند

اہل سنت کے علما کے نزدیک یہ حدیث صحیح ہے۔ بخاری اور مسلم ، ترمذی، نسائی، امام ابن ماجہ، امام ابن حبان، ابو یعلیٰ موصلی نے اِس روایت کو سعد بن ابی وقاص سے روایت کیا ہے۔

شیعی علماء اِس حدیث کو حدیث متواتر کہتے ہیں۔ شیعی علمائے محدثین نے اِس حدیث کو کثرت سے روایت کیا ہے۔ اولاً شیعی کتبِ حدیث میں یہ حدیث ابوجعفر محمد بن یعقوب الکُلَینِی (متوفی 941ء) کی کتاب الکافی میں ملتی ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button